ایڈیشنز
Urdu

كرؤاڈ فنڈنگ کی بہترین مثال مامے خان کا پہلا البم

16th Oct 2015
Add to
Shares
0
Comments
Share This
Add to
Shares
0
Comments
Share

راجستھان کے روایتی مگنيار کمیونٹی کے فنکارموسیقی کی دنیا میں خاص مقام رکھتے ہیں۔ گلوکار اور موسیقار مامے خان نے اپنا پہلا البم جاری کیا ہے، جو نہ صرف موسیقی کے لحاظ سے مخصوص ہے بلکہ كرؤاڈ فنڈنگ: اجتماعی امداد: سےبنا گیا یہ البم اپنی مثال آپ ہے۔

مگنيار کمیونٹی کے آرٹسٹ کئی نسلوں سے شاہی دربا روں کے لئے اپنے فن کا مظاہرہ کرتےآئے ہیں۔ اس کے بدلے میں ان کے شاہی سرپرست انہیں تحفے میں مویشی، اوںٹ، بکریاں یا نقد رقم دیتے تھے۔

image


مامے خان کے مطابق كرؤاڈ فنڈنگ کا تصور صدیوں پرانا ہے۔

انہوں نے ایک انٹرویو میں کہا، '' مگنيار کی وجہ بتا سکتا ہوں کہ ہماری کمیونٹی کے فنکار پہلے بادشاہوں اور شاہی گھرانوں کے لئے گاتے تھے۔ ہمیں بدلے میں سونا، چاندی، گھوڑے اور ہاتھی انعام میں ملتے تھے۔ '' خان نے کہا کہ كرؤاڈ فنڈنگ کا مقصد لوگوں کی حمایت حاصل کرنا اور موسیقی کی حوصلہ افزائی کا ماحول بنانا ہے۔

image


انہوں نے کہا، '' ہم نے انٹرنیٹ اور دوسرے ذرائع سے پیسہ جمع کرنا شروع کیا اور لوگوں سے جو مدد ملی ہے، وہ خوشی کی بات ہے، میں خوش قسمت ہوں کہ لوگ واقعی لوک سگيت میں دلچسپی رکھتے ہیں اور ہم نے جو ہدف رکھا تھا، ہمیں اس سے 30 فیصد زیادہ ملا اور وہ بھی تقریبا 20 دنوں میں ہی۔ ''

'مامے كھانس دزرٹ سیشنس' البم میں راجستھانی لوك سگيت سے سجے سات نغمے ہیں، جن میں سے کچھ پر صوفی موسیقی کا بھی اثر ہے۔( پی ٹی آئی)

Add to
Shares
0
Comments
Share This
Add to
Shares
0
Comments
Share
Report an issue
Authors

Related Tags